حویلیاں ( سہیل ارشد خان ) چوراسی گاؤں کا واحد شہر حویلیاں بنیادی سہولیات سے محروم گزشتہ پندرہ سالوں میں ایک بھی ترقیاتی کام نہیں ھوا واحد ہسپتال آر ایچ سی خستہ حالی کا شکار شہر کی سڑکیں کھنڈرات میں تبدیل عوام گندہ پانی پینے پر مجبور جگہ جگہ گندگی کے ڈھیر تحصیل ممبران اپنے ووٹروں سپوٹروں کی گلیاں نالیاں پکا کرنے میں مصروف بہار کے موسم میں بھی ایک پودا تک نہیں لگایا گیا این جی سوز کی طرف سے بنائے گئے فلٹرز پلانٹ تباہ تفصیلات کے مطابق چوراسی گاؤں کا واحد شہر حویلیاں پندرہ سالوں سے مسائل حل نا ہونے کی وجہ سے مسائلستان بن چکا ھے آر ایچ سی ھسپتال حویلیاں سہولیات کے فقدان کی وجہ سے غریب عوام در در کی ٹھوکریں کھانے پر مجبور ہو گئے ھیں ہسپتال کے باہر موجود پرائیویٹ ہسپتال عوام کی چمڑی اودیڑ رہے حویلیاں ھسپتال کار پارکنگ میں تبدیل ہو چکی ہے ھسپتال کے اندر ایکسرے تک کی سہولت موجود نہیں شہر کی سڑکیں کھنڈرات میں تبدیل ہو چکی ہیں زرا سی بارش لگ جائے یا نالے بند ہو جائیں تو سڑکیں تالاب کا منظر پیش کر تی ہیں جگہ جگہ گندگی کے ڈھیر لگے ہوتے ہیں دس بجے ٹی ایم اے کی ٹریکٹر ٹرالی کچرا اٹھانے آ تی ہے اور پورہ روڈ بند ہو جاتا ہے سترہ سے زیادہ قائم منی اڈوں نے تو عوام کے ناک میں دم کر رکھا ہے اگر کھبی کوئ سرکاری افسران ان کے خلاف کوئ ایکشن لینے کی کوشش بھی کرتا ہے تو سیاسی مداخلت کی وجہ سے چپ کر دیا جاتا ہے حویلیاں شہر میں موجود اکثر پانی کی پائپ لائنیں نالوں کے اوپر اور پاس سے گزرتی ہیں لیکج کی وجہ سے نالوں کا گندہ پانی پائپ لائنوں میں داخل ہو جاتا ہے اور عوام گندا پانی پینے پر مجبور ہیں این جی اوز کی طرف سے بنائے گئے فلٹرز پلانٹ بھی دیکھ بھال نہ ہونے کے وجہ سے تباہ ہو چکے ھیں تبدیلی کے دعوے دار بھی صرف اپنے ووٹروں کو نوازنے میں مصروف ہیں لہذا ڈیپٹی سپیکر قومی اسمبلی مرتضی جاوید عباسی ایم پی اے سردار اورنگزیب نلوٹھ تحصیل ناظم و نائب ناظم سے اپیل کی جاتی ہے کہ زرا سی توجہ حویلیاں شہر پر بھی ڈالی اور آپنے ووٹروں کے علاؤہ حویلیاں شہر پر بھی توجہ کریں 

حویلیاں شہر کی حالت زار پر ایک نظر رپورٹ سہیل ارشد
حویلیاں شہر کی حالت زار پر ایک نظر رپورٹ سہیل ارشد

 


We deeply acknowledge your queries and your kind feedback/comments are highly valuable for us.
If you find anything offensive please inform us or send us your feedback at
[havelian.net@gmail.com]
Thankyou very much, please keep visiting the website :)