حویلیاں ( ) متحدہ مجلسِ عمل ہزارہ سمیت صوبہ بھر میں مظبوط امیدوار کھڑے کرے گی، ہزارہ میں مذہبی سوچ کے اتحاد سے عوام کو سیکولر جماعتوں سے نجات دلائیں گے۔ ایم ایم اے کی مقبولیت سے حکمران جماعتیں خوفزدہ ہیں۔ ان خیالا ت کا اظہا ر جمیعتِ علماءِ اسلام ف کے رہنما اور امیدوار قومی اسمبلی حلقہ این اے 15 سردار ابرار احمد خان اور امیرِ جماعتِ اسلامی ایبٹ آبادوامیدوار صوبائی اسمبلی حلقہ پی کے 37 عبدالرزاق عباسی نے حجرہ شاہزمان میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کی بڑی مذہبی سیاسی جماعتوں کا اتحاد ،متحدہ مجلسِ عمل ، آئندہ عام انتخابات میں ایک مظبوط سیاسی قوت بن کے ابھرے گا اور پاکستان کی قومی وصوبائی اسمبلیوں میں وفاقِ پاکستان ، اسلامی فلاحی ریاست کے قیام اور غریب عوام کے حقوق کی جنگ لڑے گا۔ سردار ابراب احمد خان نے کہا کہ قائدِ جمیعت مولانا فضل الرحمان اور سراج الحق سمیت اتحاد میں شامل تمام قائدین اس بات پر متفق ہیں کہ آئندہ الیکشن میں مغربی و سیکولر ذہنیت کی جماعتوں کا راستہ روکا جائے۔ پاکستان کی فلاح و ترقی صرف اسلامی نظام میں ہے اور جب تک پاکستان کے قانون ساز اداروں میں اسلامی سوچ کے حامل افراد نہیں ہوں گے تبدیلی نہیں آئے گی۔ عبدالرزاق عباسی نے کہا کہ ایم ایم اے کے اتحاد سے پہلے بھی خیبر پختون خواہ میں حکومت بنی تھی اور آئندہ انتخابات میں بھی ایم ایم اے بھاری اکشریت سے کامیاب ہو گی۔ انہوں نے کہا کہ ضلع ایبٹ آباد کی دو قومی اور چار صوبائی نشستوں پر مظبوط امیدوار کھڑے کریں گے۔ ایم ایم اے کے پلیٹ فارم سے جمیعتِ علماءِ اسلام ، جماعتِ اسلامی اور اتحاد میں شامل دیگر جماعتوں سمیت بہت سی عوامی اور قدآور سیاسی شخصیات الیکشن لڑنے کی خواہشمند ہیں البتہ حتمی امیدواروں کا اعلان اتحاد کی مرکزی قیادت اور پارلیمانی بورڈ کرے گی۔ اس موقع پرجمیعتِ علماءِ اسلام ایبٹ آباد کے جنرل سیکریٹری مفتی ذین العابدین اور ممبر تحصیل کونسل سردار محمد ایوب بھی موجود تھے۔

 


We deeply acknowledge your queries and your kind feedback/comments are highly valuable for us.
If you find anything offensive please inform us or send us your feedback at
[havelian.net@gmail.com]
Thankyou very much, please keep visiting the website :)